سنن ابو داؤد - دعاؤں کا بیان - 1476
حدیث نمبر: 1480
حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا يَحْيَى، ‏‏‏‏‏‏عَنْ شُعْبَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ زِيَادِ بْنِ مِخْرَاقٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي نَعَامَةَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ ابْنٍ لِسَعْدٍ، ‏‏‏‏‏‏أَنَّهُ قَالَ:‏‏‏‏ سَمِعَنِي أَبِيوَأَنَا أَقُولُ:‏‏‏‏ اللَّهُمَّ إِنِّي أَسْأَلُكَ الْجَنَّةَ وَنَعِيمَهَا وَبَهْجَتَهَا، ‏‏‏‏‏‏وَكَذَا، ‏‏‏‏‏‏وَكَذَا، ‏‏‏‏‏‏وَأَعُوذُ بِكَ مِنَ النَّارِ وَسَلَاسِلِهَا وَأَغْلَالِهَا، ‏‏‏‏‏‏وَكَذَا، ‏‏‏‏‏‏وَكَذَا، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ يَا بُنَيَّ، ‏‏‏‏‏‏إِنِّي سَمِعْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، ‏‏‏‏‏‏يَقُولُ:‏‏‏‏ سَيَكُونُ قَوْمٌ يَعْتَدُونَ فِي الدُّعَاءِفَإِيَّاكَ أَنْ تَكُونَ مِنْهُمْ، ‏‏‏‏‏‏إِنَّكَ إِنْ أُعْطِيتَ الْجَنَّةَ أُعْطِيتَهَا وَمَا فِيهَا مِنَ الْخَيْرِ، ‏‏‏‏‏‏وَإِنْ أُعِذْتَ مِنَ النَّارِ أُعِذْتَ مِنْهَا وَمَا فِيهَا مِنَ الشَّرِّ.
سعد (رض) کے ایک بیٹے سے روایت ہے کہ انہوں نے کہا : میرے والد نے مجھے کہتے سنا : اے اللہ ! میں تجھ سے جنت کا اور اس کی نعمتوں، لذتوں اور فلاں فلاں چیزوں کا سوال کرتا ہوں اور میں تیری پناہ مانگتا ہوں جہنم سے، اس کی زنجیروں سے، اس کے طوقوں سے اور فلاں فلاں بلاؤں سے، تو انہوں نے مجھ سے کہا : میرے بیٹے ! میں نے رسول اللہ کو فرماتے سنا ہے : عنقریب کچھ لوگ ایسے ہوں گے جو دعاؤں میں مبالغہ اور حد سے تجاوز کریں گے، لہٰذا تم بچو کہ کہیں تم بھی ان میں سے نہ ہوجاؤ جب تمہیں جنت ملے گی تو اس کی ساری نعمتیں خود ہی مل جائیں گی اور اگر تم جہنم سے بچا لیے گئے تو اس کی تمام بلاؤں سے خودبخود بچا لئے جاؤ گے ۔
تخریج دارالدعوہ : تفرد بہ أبوداود، (تحفة الأشراف : ٣٩٤٨) ، وقد أخرجہ : مسند احمد (١/١٧٢، ١٨٣) (حسن صحیح )
Narrated Saad ibn Abu Waqqas (RA) : Ibn Saad said: My father (Saad ibn Abu Waqqas) heard me say: O Allah, I ask Thee for Paradise, its blessings, its pleasure and such-and-such, and such-and-such; I seek refuge in Thee from Hell, from its chains, from its collars, and from such-and-such, and from such-and-such. He said: I heard the Messenger of Allah ﷺ say: There will be people who will exaggerate in supplication. You should not be one of them. If you are granted Paradise, you will be granted all what is good therein; if you are protected from Hell, you will be protected from what is evil therein.
Top