سنن ابو داؤد - سزاؤں کا بیان - 4333
حدیث نمبر: 4351
حَدَّثَنَا أَحْمَدُ بْنُ مُحَمَّدِ بْنِ حَنْبَلٍ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيل بْنُ إِبْرَاهِيمَ، ‏‏‏‏‏‏أَخْبَرَنَا أَيُّوبُ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عِكْرِمَةَ، ‏‏‏‏‏‏أَنَّ عَلِيًّا عَلَيْهِ السَّلَام أَحْرَقَ نَاسًا ارْتَدُّوا عَنِ الْإِسْلَامِ، ‏‏‏‏‏‏فَبَلَغَ ذَلِكَ ابْنَ عَبَّاسٍ فَقَالَ:‏‏‏‏ لَمْ أَكُنْ لِأُحْرِقَهُمْ بِالنَّارِ، ‏‏‏‏‏‏إِنّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ:‏‏‏‏ لَا تُعَذِّبُوا بِعَذَابِ اللَّهِ وَكُنْتُ قَاتِلَهُمْ بِقَوْلِ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَإِنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ:‏‏‏‏ مَنْ بَدَّلَ دِينَهُ فَاقْتُلُوهُ، ‏‏‏‏‏‏فَبَلَغَ ذَلِكَ عَلِيًّا عَلَيْهِ السَّلَام، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ وَيْحَ ابْنِ عَبَّاسٍ.
عکرمہ سے روایت ہے کہ علی (رض) نے کچھ لوگوں کو جو اسلام سے پھرگئے تھے آگ میں جلوا دیا، ابن عباس (رض) کو یہ بات معلوم ہوئی تو انہوں نے کہا : مجھے یہ زیب نہیں دیتا کہ میں انہیں جلاؤں، رسول اللہ نے فرمایا ہے : تم انہیں وہ عذاب نہ دو جو اللہ کے ساتھ مخصوص ہے میں تو رسول اللہ کے قول کی رو سے انہیں قتل کردیتا کیونکہ آپ نے فرمایا ہے : جو اسلام چھوڑ کر کوئی اور دین اختیار کرلے اسے قتل کر دو پھر جب علی (رض) کو یہ بات پہنچی تو انہوں نے کہا : اللہ ابن عباس کی ماں پر رحم فرمائے انہوں نے بڑی اچھی بات کہی۔
تخریج دارالدعوہ : صحیح البخاری/الجہاد ١٤٩ (٣٠١٧) ، المرتدین ٢ (٦٩٢٢) ، سنن الترمذی/الحدود ٢٥ (١٤٥٨) ، سنن النسائی/المحاربة ١١ (٤٠٦٤) ، سنن ابن ماجہ/الحدود ٢ (٢٥٣٥) ، (تحفة الأشراف : ٥٩٨٧) ، وقد أخرجہ : مسند احمد ( ١/٢٨٢، ٢٨٣، ٣٢٣) (صحیح )
Ikrimah said: Ali burned some people who retreated from islam. When Ibn Abbas was informed of it, he said: If it had been I, I would not have then burned, for the Messenger of Allah said: Do not inflict Allah’s punishment on anyone, but would have had killed them on account of the statement of the Messenger of Allah . The Messenger said: Kill those who change their religion. When ‘All was informed about it he said: How truly Ibn Abbas said!
Top