صحیح مسلم - شکار کا بیان - 4966
حَدَّثَنَا إِسْحَقُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ الْحَنْظَلِيُّ أَخْبَرَنَا جَرِيرٌ عَنْ مَنْصُورٍ عَنْ إِبْرَاهِيمَ عَنْ هَمَّامِ بْنِ الْحَارِثِ عَنْ عَدِيِّ بْنِ حَاتِمٍ قَالَ قُلْتُ يَا رَسُولَ اللَّهِ إِنِّي أُرْسِلُ الْکِلَابَ الْمُعَلَّمَةَ فَيُمْسِکْنَ عَلَيَّ وَأَذْکُرُ اسْمَ اللَّهِ عَلَيْهِ فَقَالَ إِذَا أَرْسَلْتَ کَلْبَکَ الْمُعَلَّمَ وَذَکَرْتَ اسْمَ اللَّهِ عَلَيْهِ فَکُلْ قُلْتُ وَإِنْ قَتَلْنَ قَالَ وَإِنْ قَتَلْنَ مَا لَمْ يَشْرَکْهَا کَلْبٌ لَيْسَ مَعَهَا قُلْتُ لَهُ فَإِنِّي أَرْمِي بِالْمِعْرَاضِ الصَّيْدَ فَأُصِيبُ فَقَالَ إِذَا رَمَيْتَ بِالْمِعْرَاضِ فَخَزَقَ فَکُلْهُ وَإِنْ أَصَابَهُ بِعَرْضِهِ فَلَا تَأْکُلْهُ
اسحاق بن ابراہیم حنظلی، جریر، منصور ابراہیم، ہمام بن حارث، عدی بن حاتم سے روایت ہے فرماتے ہیں کہ میں نے عرض کیا اے اللہ کے رسول (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) میں سکھلائے گئے کتوں کو بھیجتا ہوں اور وہ میرے لئے شکار کو روک رکھتے ہے اور میں اس پر اللہ کا نام (بسم اللہ) بھی پڑھ لیتا ہوں تو آپ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا جب تو اپنے سکھلائے گئے کتے کو بھیجے اور اس پر اللہ کا نام لے تو تو اسے (شکار) کھا۔ میں نے عرض کیا اگرچہ وہ اسے مار ڈالے آپ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا اگرچہ وہ اسے مار ڈالے شرط یہ کہ کوئی اور کتا اس کے ساتھ نہ مل گیا ہو میں نے آپ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) سے عرض کیا میں بغیر پر کا تیر شکار کو مارتا ہوں اور وہ مرجاتا ہے آپ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا جب تو بغیر پر کے تیر شکار کو مارے اور وہ اس کے پار ہوجائے تو اسے کھالے اور اگر وہ تیر کے عرض سے (شکار) مرجائے تو پھر تو اسے مت کھا۔
Top