سنن الترمذی - قربانی کا بیان - 1543
حدیث نمبر: 1493
حَدَّثَنَا أَبُو عَمْرٍو مُسْلِمُ بْنُ عَمْرِو بْنِ مُسْلِمٍ الْحَذَّاءُ الْمَدَنِيُّ،‏‏‏‏ حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ نَافِعٍ الصَّائِغُ أَبُو مُحَمَّدٍ،‏‏‏‏ عَنْ أَبِي الْمُثَنَّى، عَنْ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ،‏‏‏‏ عَنْ أَبِيهِ،‏‏‏‏ عَنْ عَائِشَةَ،‏‏‏‏ أَنّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ:‏‏‏‏ مَا عَمِلَ آدَمِيٌّ مِنْ عَمَلٍ يَوْمَ النَّحْرِ،‏‏‏‏ أَحَبَّ إِلَى اللَّهِ مِنْ إِهْرَاقِ الدَّمِ،‏‏‏‏ إِنَّهَا لَتَأْتِي يَوْمَ الْقِيَامَةِ بِقُرُونِهَا،‏‏‏‏ وَأَشْعَارِهَا،‏‏‏‏ وَأَظْلَافِهَا،‏‏‏‏ وَأَنَّ الدَّمَ لَيَقَعُ مِنَ اللَّهِ بِمَكَانٍ قَبْلَ أَنْ يَقَعَ مِنَ الْأَرْضِ،‏‏‏‏ فَطِيبُوا بِهَا نَفْسًا ،‏‏‏‏ قَالَ:‏‏‏‏ وَفِي الْبَاب،‏‏‏‏ عَنْ عِمْرَانَ بْنِ حُصَيْنٍ،‏‏‏‏ وَزَيْدِ بْنِ أَرْقَمَ،‏‏‏‏ قَالَ أَبُو عِيسَى:‏‏‏‏ هَذَا حَدِيثٌ حَسَنٌ غَرِيبٌ،‏‏‏‏ لَا نَعْرِفُهُ مِنْ حَدِيثِ هِشَامِ بْنِ عُرْوَةَ،‏‏‏‏ إِلَّا مِنْ هَذَا الْوَجْهِ،‏‏‏‏ وَأَبُو الْمُثَنَّى اسْمُهُ:‏‏‏‏ سُلَيْمَانُ بْنُ يَزِيدَ،‏‏‏‏ وَرَوَى عَنْهُ ابْنُ أَبِي فُدَيْكٍ،‏‏‏‏ قَالَ أَبُو عِيسَى:‏‏‏‏ وَيُرْوَى عَنْ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ أَنَّهُ قَالَ:‏‏‏‏ فِي الْأُضْحِيَّةِ لِصَاحِبِهَا بِكُلِّ شَعَرَةٍ حَسَنَةٌ ،‏‏‏‏ وَيُرْوَى بِقُرُونِهَا.
ام المؤمنین عائشہ (رض) کہتی ہیں کہ رسول اللہ نے فرمایا : قربانی کے دن اللہ کے نزدیک آدمی کا سب سے محبوب عمل خون بہانا ہے، قیامت کے دن قربانی کے جانور اپنی سینگوں، بالوں اور کھروں کے ساتھ آئیں گے قربانی کا خون زمین پر گرنے سے پہلے قبولیت کا درجہ حاصل کرلیتا ہے، اس لیے خوش دلی کے ساتھ قربانی کرو ۔
امام ترمذی کہتے ہیں : ١ - یہ حدیث حسن غریب ہے، ہشام بن عروہ کی اس حدیث کو ہم صرف اسی سند سے جانتے ہیں، ٢ - اس باب میں عمران بن حصین اور زید بن ارقم (رض) سے بھی احادیث آئی ہیں، ٣ - راوی ابومثنی کا نام سلیمان بن یزید ہے، ان سے ابن ابی فدیک نے روایت کی ہے، ٤ - رسول اللہ سے مروی ہے کہ آپ نے فرمایا : قربانی کرنے والے کو قربانی کے جانور کے ہر بال کے بدلے نیکی ملے گی ، ٥ - یہ بھی مروی ہے کہ جانور کی سینگ کے عوض نیکی ملے گی۔
تخریج دارالدعوہ : سنن ابن ماجہ/الأضاحي ٣ (٣١٢٦) ، (تحفة الأشراف : ١٧٣٤٣) (ضعیف جداً ) (سند میں ” ابو المثنی سلیمان بن یزید “ سخت ضعیف ہے )
قال الشيخ الألباني : ضعيف، ابن ماجة (3126) // ضعيف سنن ابن ماجة برقم (671) ، المشکاة (1470) ، ضعيف الجامع الصغير (5112) //
صحيح وضعيف سنن الترمذي الألباني : حديث نمبر 1493
Sayyidah Ayshah (RA) narrated that Allahs Messenger said, “Of the deeds a man does on the day of sacrifice the dearest to Allah is the flow of blood (sacrifice). It will come on the day of Resurrection with its horns and its hair and its hoofs. Indeed, blood will be accepted by Allah at once even before it falls on the ground. So, please yourselves with it![Ibn e Majah 3126]
Top