سنن الترمذی - نکاح کا بیان - 1078
حدیث نمبر: 1080
حَدَّثَنَا سُفْيَانُ بْنُ وَكِيعٍ، حَدَّثَنَا حَفْصُ بْنُ غِيَاثٍ، عَنْ الْحَجَّاجِ، عَنْ مَكْحُولٍ، عَنْ أَبِي الشِّمَالِ، عَنْ أَبِي أَيُّوبَ، قَالَ:‏‏‏‏ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ:‏‏‏‏ أَرْبَعٌ مِنْ سُنَنِ الْمُرْسَلِينَ:‏‏‏‏ الْحَيَاءُ، ‏‏‏‏‏‏وَالتَّعَطُّرُ، ‏‏‏‏‏‏وَالسِّوَاكُ، ‏‏‏‏‏‏وَالنِّكَاحُ . قَالَ:‏‏‏‏ وَفِي الْبَاب، ‏‏‏‏‏‏عَنْ عُثْمَانَ، ‏‏‏‏‏‏وَثَوْبَانَ، ‏‏‏‏‏‏وَابْنِ مَسْعُودٍ، ‏‏‏‏‏‏وَعَائِشَةَ، ‏‏‏‏‏‏وَعَبْدِ اللَّهِ بْنِ عَمْرٍو، ‏‏‏‏‏‏وَأَبِي نَجِيحٍ، ‏‏‏‏‏‏وَجَابِرٍ، ‏‏‏‏‏‏وَعَكَّافٍ. قَالَ أَبُو عِيسَى:‏‏‏‏ حَدِيثُ أَبِي أَيُّوبَ حَدِيثٌ حَسَنٌ غَرِيبٌ.
ابوایوب انصاری (رض) کہتے ہیں کہ رسول اللہ نے فرمایا : چار باتیں انبیاء و رسل کی سنت میں سے ہیں : حیاء کرنا، عطر لگانا، مسواک کرنا اور نکاح کرنا ١ ؎۔
امام ترمذی کہتے ہیں : ١- ابوایوب انصاری (رض) کی حدیث حسن غریب ہے -
تخریج دارالدعوہ : تفرد بہ المؤلف (٣٤٩٩) ، وانظر : مسند احمد (٥/٤٢١) (ضعیف) (سند میں ابو الشمال مجہول راوی ہیں، لیکن اس حدیث کے معنی کی تائید دیگر طرق سے موجود ہے)
وضاحت : ١ ؎ : یعنی رسولوں نے خود اسے کیا ہے اور لوگوں کو اس کی ترغیب دی ہے ، رسولوں کی سنت اسے تغلیباً کہا گیا ہے کیونکہ ان میں کچھ چیزیں ایسی ہیں جنہیں بعض رسولوں نے نہیں کیا ہے مثلاً نوح (علیہ السلام) نے ختنہ نہیں کرایا اور عیسیٰ (علیہ السلام) نے شادی نہیں کی۔
قال الشيخ الألباني : ضعيف، المشکاة (382) ، الإرواء (75) ، الرد علی الکتاني ص (12) // ضعيف الجامع الصغير (760) //
صحيح وضعيف سنن الترمذي الألباني : حديث نمبر 1080
Sayyidina Abu Ayyub rreported Allah’s Messenger as saying, “Four things are from the sunnah of the Prophets ﷺ modesty, perfume, siwak and marriage”.[Ahmed 23641]
Top