صحيح البخاری - غزوات کا بیان - 3789
حدیث نمبر: 3949
حَدَّثَنِي عَبْدُ اللَّهِ بْنُ مُحَمَّدٍ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا وَهْبٌ، ‏‏‏‏‏‏حَدَّثَنَا شُعْبَةُ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ،‏‏‏‏ كُنْتُ إِلَى جَنْبِ زَيْدِ بْنِ أَرْقَمَ فَقِيلَ لَهُ:‏‏‏‏ كَمْ غَزَا النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ مِنْ غَزْوَةٍ ؟قَالَ:‏‏‏‏ تِسْعَ عَشْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قِيلَ:‏‏‏‏ كَمْ غَزَوْتَ أَنْتَ مَعَهُ ؟ قَالَ:‏‏‏‏ سَبْعَ عَشْرَةَ، ‏‏‏‏‏‏قُلْتُ:‏‏‏‏ فَأَيُّهُمْ كَانَتْ أَوَّلَ ؟ قَالَ:‏‏‏‏ الْعُسَيْرَةُ أَوْ الْعُشَيْرُ،‏‏‏‏ فَذَكَرْتُ لِقَتَادَةَ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ الْعُشَيْرُ.
مجھ سے عبداللہ بن محمد نے بیان کیا، کہا ہم سے وہب نے بیان کیا، ان سے شعبہ نے، ان سے ابواسحاق نے کہ میں ایک وقت زید بن ارقم (رض) کے پہلو میں بیٹھا ہوا تھا۔ ان سے پوچھا گیا تھا کہ نبی کریم نے کتنے غزوے کئے ؟ انہوں نے کہا انیس۔ میں نے پوچھا آپ نبی کریم کے ساتھ کتنے غزوات میں شریک رہے ؟ تو انہوں نے کہا کہ سترہ میں۔ میں نے پوچھا آپ کا سب سے پہلا غزوہ کون سا تھا ؟ کہا کہ عسیرہ یا عشیرہ۔ پھر میں نے اس کا ذکر قتادہ سے کیا تو انہوں نے کہا کہ (صحیح لفظ) عشیرہ ہے۔
Narrated Abu Ishaq: Once, while I was sitting beside Zaid bin Al-Arqam, he was asked, "How many Ghazwat did the Prophet ﷺ undertake?" Zaid replied, "Nineteen." They said, "In how many Ghazwat did you join him?" He replied, "Seventeen." I asked, "Which of these was the first?" He replied, "Al-'Ashira or Al-'Ashiru."
Top