مشکوٰۃ المصابیح - صور پھونکے جانے کا بیان - 5432
" صور " اصل میں نرسنگا ( سنگھ) اور قرنا کو کہتے ہیں جس میں پھونکنے سے ایک بلند آواز پیدا ہوتی ہے اور یہاں وہ مخصوص نر سنگا ( سنگھ) مراد ہے جس کو حضرت اسرافیل (علیہ السلام) پھونکیں گے حضرت اسرافیل (علیہ السلام) کا یہ صور پھونکنا دو مرتبہ ہوگا ایک بار تو اس وقت جب قیامت آنے کو ہوگی اور اس صور کی آواز سے تمام لوگ مرجائیں گے اور دوسری بار اس وقت جب تمام لوگوں کو میدان حشر میں جمع کرنے کے لئے دوبارہ زندہ کرنا مقصود ہوگا چناچہ اس صور کی آواز سے تمام لوگ زندہ ہو کر میدان حشر میں جمع ہوں گے۔
Top