مسند امام احمد - حضرت قبید بن مطرف غفاری کی حدیث۔ - 14941
حَدَّثَنَا أَبُو عَامِرٍ عَبْدُ الْمَلِكِ بْنُ عَمْرٍو حَدَّثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ الْمُطَّلِبِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ قَالَ حَدَّثَنِي أَخِي الْحَكَمُ بْنُ الْمُطَّلِبِ عَنْ أَبِيهِ عَنْ قُهَيْدِ بْنِ مُطَرِّفٍ الْغِفَارِيِّ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ سَأَلَهُ سَائِلٌ إِنْ عَدَا عَلَيَّ عَادٍ فَأَمَرَهُ أَنْ يَنْهَاهُ ثَلَاثَ مِرَارٍ قَالَ فَإِنْ أَبَى فَأَمَرَهُ بِقِتَالِهِ قَالَ فَكَيْفَ بِنَا قَالَ إِنْ قَتَلَكَ فَأَنْتَ فِي الْجَنَّةِ وَإِنْ قَتَلْتَهُ فَهُوَ فِي النَّارِ
حضرت قبید بن مطرف غفاری سے مروی ہے کہ ایک شخص نے نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) سے یہ سوال پوچھا کہ اگر کوئی شخص میرے ساتھ ظلم و زیادتی کرنا چاہے تو میں کیا کروں نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا کہ اسے تین مرتبہ سمجھاؤ اس سے منع کرو سائل نے پوچھا کہ اگر وہ پھر بھی باز نہ آئے تو فرمایا پھر اس سے قتال کرو سائل نے پوچھا کہ اس صورت میں ہمارا حکم کیا ہوگا فرمایا اگر اس نے تمہیں قتل کردیا تو تم جنت میں جاؤ گے اگر تم نے اسے قتل کردیا تو وہ جہنم میں جائے گا۔
Top