سنن النسائی - عطیہ اور بخشش سے متعلق احادیث مبارکہ - 3708
أَخْبَرَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ، ‏‏‏‏‏‏عَنِ الزُّهْرِيِّ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ حُمَيْدٍ. ح وَأَنْبَأَنَا مُحَمَّدُ بْنُ مَنْصُورٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ سُفْيَانَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ سَمِعْنَاهُ مِنَ الزُّهْرِيِّ، ‏‏‏‏‏‏أَخْبَرَنِي حُمَيْدُ بْنُ عَبْدِ الرَّحْمَنِ، ‏‏‏‏‏‏وَمُحَمَّدُ بْنُ النُّعْمَانِ،‏‏‏‏ عَنِ النُّعْمَانِ بْنِ بَشِيرٍ، ‏‏‏‏‏‏أَنَّ أَبَاهُ نَحَلَهُ غُلَامًا فَأَتَى النَّبِيَّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يُشْهِدُهُ، ‏‏‏‏‏‏فَقَالَ:‏‏‏‏ أَكُلَّ وَلَدِكَ نَحَلْتَ،‏‏‏‏ قَالَ:‏‏‏‏ لَا، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ فَارْدُدْهُ،‏‏‏‏ وَاللَّفْظُ لِمُحَمَّدٍ.
نعمان بن بشیر رضی الله عنہما سے روایت ہے کہ انہیں ان کے والد نے ایک غلام ہبہ کیا، تو نبی اکرم کے پاس آئے کہ آپ کو اس پر گواہ بنائیں۔ آپ نے پوچھا : کیا تم نے اپنے سبھی بیٹوں کو یہ عطیہ دیا ہے ؟ انہوں نے کہا : نہیں، آپ نے فرمایا : تو تم اسے واپس لے لو ۔ اس حدیث کے الفاظ محمد (راوی) کے ہیں۔
تخریج دارالدعوہ : صحیح البخاری/الہبة ١٢ (٢٥٨٦) ، صحیح مسلم/الہبات ٣ (١٦٢٣) ، سنن الترمذی/الأحکام ٣٠ (١٣٦٧) ، سنن ابن ماجہ/الہبات ١ (٢٣٧٦) ، (تحفة الأشراف : ١١٦١٧) ، موطا امام مالک/الأقضیة ٣٣ (٣٩) ، مسند احمد (٤/٢٦٨، ٢٧٠) ویأتی فیما یلی : ٣٧٠٣، ٣٧٠٤، ٣٧٥ (صحیح )
قال الشيخ الألباني : صحيح
صحيح وضعيف سنن النسائي الألباني : حديث نمبر 3672
It was narrated from An-Nu'man bin Bashir that his father gave him a slave as a present, then he came to the Prophet (صلی اللہ علیہ وسلم) to ask him to bear witness (to that). He said: "Have you given a present to all of your children?" He said: "No." He said: "Then take it back." This wording is that of (one of the narrators) Muhammad.
Top